حسینی شریف میں منایا گیا 67 واں سالانہ عرس جنابی

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

دینی عصری تعلیم کے ساتھ بہتر تربیت وقت کی اہم ضرورت: سلطان رضا

موتیہاری (عاقب چشتی)

خانقاہ جنابیہ حسینی شریف مشرقی چمپارن کے زیر اہتمام عارف باللہ حضرت جناب علی شاہ علیہ الرحمہ کا 67 واں و برہان العارفین علامہ عمر علی قادری تیغی علیہ الرحمہ کا 19 واں سالانہ عرس سراپا قدس منایا گیا جس میں ملک کے نامور خطباء و شعراء نے شرکت کی اور مزار شریف کی چادر پوشی و گل پوشی سمیت دیگر عرس کی ساری تقریبات سجادہ نشیں کی صدارت میں ادا کی گئی جبکہ جملہ زائرین کے لیے جنابی لنگر کا انتظام کیا گیا تھا اس موقع سے منعقدہ اجلاس خطاب کرتے ہوئے سجادہ نشیں پیر طریقت علامہ الحاج الشاہ ضیاء المجتبیٰ کامل نے کہا کہ آقائے کریم علیہ التحیۃ والتسلیم کے اسوۂ حسنہ کے مطابق اللہ کے مقرب بندوں نے اپنی زندگی گزاری اور ہمیشہ صدق و صفا,عدل و وفا کا درس دیا اور انسانیت کا پیغام عام کیا اس لیے اولیاء اللہ کے پیغامات کو عام کرنا اور اس پر سختی سے عمل پیرا ہونا وقت کی اہم ضرورت ہے ان بوریہ نشینوں نے دین و ملت کی جو خدمات کیں وہ آب زر سے لکھے جانے کے قابل ہے محبوب المشائخ حضرت جناب علی شاہ قادری تیغی اور برہان العارفین علامہ عمر علی قادری نے سرزمین چمپارن سمیت ریاست کے کئی اضلاع میں جو دینی و تبلیغی خدمات انجام دیے وہ خود میں بے مثال ہے اور انہوں نے شیخ المشائخ حضرت تیغ علی قادری علیہ الرحمہ کے مشن کو عام کیا جبکہ بی جے پی اقلیتی سیل کے ریاستی صدر مولانا طفیل احمد خان قادری نے کہا کہ اللہ کے ولیوں نے پوری دنیا میں امن و آشتی اور قومی یکجہتی کا پیغام عام کیا اور اپنے اخلاق حسنہ و خدمت خلق کے ذریعے کروڑوں افراد کو صراط مستقیم پر گامزن کردیا اس لیے ان اللہ والوں کے نقش قدم کو مشعل راہ ہدایت بنانے اور اس پر سختی سے عمل کرنے کی ضرورت ہے جبکہ مفتی سلطان رضا سیوانی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایمان کو مستحکم کرنے اور بچوں کو دینی عصری تعلیمات سے آراستہ کرنے کے ساتھ ساتھ اعلیٰ تربیت کی سخت ضرورت ہے اور بزرگان دین کے آستانے سے منسلک رہیں اور ان کی تاریخ سے اپنے بچوں کو روشناس کرائیں اور سماج و معاشرہ میں بڑھتے ہوئے فتنۂ ارتداد کو روکنے کی تحریک چلائی جائے اجلاس کی نقابت ضیاء نیپالی نے انجام دیے اور شاعر اسلام جناب توقیر رضا الہ آبادی,اختر ضیاء مظفرپوری,روشن غزالی,بسمل نیپالی,جمشید ساحل بریلوی,دلشاد رضا سمیت کئی شعراء نے نعت و منقبت کا گلدستہ پیش کیا اور ملک کے کئی نامور خطباء نے سامعین کو خطاب کیا جبکہ اس موقع سے مولانا صدرالحسن نوری,مولانا عظیم الدین ثقافی,مولانا حسنین رضا ضیائی,قاری نوشاد چمپارنی, مولانا سراج الحق اشرفی,جے ڈی یو لیڈر وصیل احمد خان,بی جے پی اقلیتی ضلع صدر محب الحق خان, سید نوشاد احمد ,ثاقب زماں, سماجی کارکن و مکھیا فیضان مصطفیٰ,ناز محمد قادری,صبا قادری,شرف الدین چشتی ,سعید اللہ قادری,اشرف عالم تیغی, مولانا کوکب جمال مصباحی, سمیت ہزاروں افراد موجود تھے۔

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

About انیس الرحمٰن چشتی

جناب انیس الرحمٰن عاقب چشتی صاحب صوبہ بہار کے ضلع موتی ہاری سے تعلق رکھنے والے ایک معروف شاعر اور سینیئر صحافی ہیں۔ ہماری آواز

Check Also

ایسی گرمی ہے کہ پیلے پھول بھی کالے پڑ گئے

ازقلم: محمد ہاشم اعظمی مصباحینوادہ مبارکپور اعظم گڈھ یوپی مکرمی! یہ بات سب کو معلوم …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔