قومی ترانہیوم آزادی و یوم جمہوریہ

قومی ترانہ: اے وطن تیری عظمت سلامت رہے

میرے آقا کی نسبت سلامت رہے
اے وطن تیری عظمت سلامت رہے

سرور دیں کو آءی تھی ٹھنڈی ہوا
جس جگہ سے وہی ہند کی ہے جگہ
اس لیے پاک ہے ہر سو اس کی فضا
خوشبوؤں کی نفاست سلامت رہے
اے وطن تیری عظمت سلامت رہے

تیری دھرتی پہ گل الفتوں کے کھلیں
خار سارے تعصب کے جھڑتے رہیں
جو بھی بچھڑے ہوئے ہیں وہ سب پھر جڑیں
ایکتائی کی فطرت سلامت رہے
اے وطن تیری عظمت سلامت رہے

تیری دھرتی میں آئے تھے خواجہ معین
وہ جو پھیلائے چاروں طرف رب کا دین
تیرے باشندے ان کے رہے ہیں رہین
تجھ میں اسلامی صورت سلامت رہے
اے وطن تیری عظمت سلامت رہے

تیری دھرتی میں پیدا ہوئے تھے رضا
وہ رضا پیکر عشق و خلق و وفا
جن کی کاوش سے ایمان سالم رہا
تجھ میں حق کی اشاعت سلامت رہے
اے وطن تیری عظمت سلامت رہے

آریہ بھٹ سے زیرو کا ایجاد ہے
تیرے استادوں سے علم آباد ہے
"عینی” کی اپنے رب سے یہ فریاد ہے
سارے عالم میں شہرت سلامت رہے
اے وطن تیری عظمت سلامت رہے
۔۔۔
ازقلم: سید خادم رسول عینی

ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانب دار نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

متعلقہ مضامین و خبریں

جواب دیں

Back to top button