انٹرویو

نہیں تیرا نشیمن قصرِ سلطانی کے گنبد پر

  • نوجوان صحافی مولانا آصف جمیل امجدی سے خصوصی ملاقات

تحریر: ڈاکٹر عاصم امجدی لکھنوی

اللہ عزوجل نے انسان کو اولو العزم، روشن خیال، عالی مرتبت اور بلند ہمت جیسی عظیم صفات سے مزین تخلیق فرمایا ہے، مذکورہ جملہ صفات مترقبہ محب گرامی وقار نوجوان صحافی مولانا آصف جمیل امجدی گونڈوی میں بدرجہ اتم پایا جاتا ہے کیوں کہ گیسوۓ قرطاس و قلم کی مشاطگی کرنے والوں میں ایک نمایاں نام آپ کا بھی ہے یہی وجہ ہے کہ ایڈیٹر روزنامہ شانِ سدھارتھ نے آپ کو صحافت کے منصبِ جلیلہ پر فاٸزالمرام فرمایا، جس سے روزنامہ شانِ سدھارتھ کا وقار اردو دنیا میں منفرد اور ممتاز نظر آرہا ہے۔ جو روز افزوں ترقی کی شاہ راہ پر ہے۔
صحافی صاحب سے ہمارے دیرینہ تعلقات ہیں آپ کثرتِ مطالعہ اور لکھنے پڑھنے کا دورانِ طالبِ علمی سے غیر معمولی حد تک شاٸق تھے۔ آپ جامعہ امجدیہ کی جانب سے ہمارے روم کے چیف مقرر کیے گیے تھے۔ روم کے طلبہ آپ سے کسی معاملے میں مشورہ طلب کرتے تو ایسا دور اندیش اور روشن صلاح عنایت فرماتے جو مستقبل میں در پیش آنے والے مصاٸب کا ازالہ کرتا۔ آپ قوم و ملت کے لیے ہمیشہ فکر مند رہا کرتے ہیں اور ان کی فلاح و بہبود کا طریقہ کار بھی اختیار فرماتے ہیں۔ میں نے بارہا یہ جاٸزہ لیا کہ آپ کی مطالعاتی میز پر اکثر وہ کتابچے ہوا کرتے ہیں جس میں قوم مسلم کی فلاح و اصلاح کا احسن طریقہ درج ہو۔ آپ میں قوم و ملت کے لیے لیڈر بننے کا عنصر خدا کا عطیہ ہے اور اس میں کافی حد تک کامیاب نظر آر ہے ہیں۔ زندگی کی مصروفیات تعلیم و تعلم نیز مستقبل قریب میں آپ کا مقصد عظیمہ کیا کیا ہیں ان زمروں پر گھنٹوں تبادلہٕ خیال فرماتے رہے۔ جس سے اندازہ ہوا کہ آپ کس قدر مصروف و متحرک فعال ہیں۔ عرصہ دراز کے بعد آپ سے ملاقات ہوٸی تھی ماشإاللہ طالبِ علمی کا دور دوبارہ مزید تازہ ہوگیا وہی ہنستا مسکراتا بارعب چہرا جس میں صرف داڑھی کا اضافہ ہوا باقی وہی انداز حیات رہا۔ آپ طلیق الوجہ والسان ہیں یہی وجہ ہے کہ اجنبی آدمی بھی آپ سے ہم کلام ہوتے ہی دیوانگی و عاشقی کا دم بھرنے لگتا ہے۔ آپ میں ایک چیز میں نے بہت قریب سے دیکھا اور محسوس بھی کیا۔ منفی فکر سے کوسوں دور، حوصلے اور جزبے کے اعلیٰ پیمانے پر ہیں جس کام کو کرنے کا ارادہ بنایا جب تک اسے پاۓ تکمیل تک نہیں پہنچا دیتے اس وقت تک رکنا تھکنا آپ کے نزدیک چہ معنیٰ دارد۔ آپ نے نسلِ نو کو تہذیبِ مغرب کے بیہودہ رسم و رواج سے محفوظ رکھنے اور ان کی ژولیدہ زلفوں کے لیے ایک تحقیقی قلمی نسخہ ” شادی اور ساٸنسی حقاٸق “ کے نام سے ایک عظیم الشان شاہ کار تصنیف کی ہے، جو کہ نسلِ نو کے لیے بے حد مفید ہے۔ منظرِ عام پر آتے ہی اس کے مطالعہ کا آپ کو مشورہ دیتا ہوں۔ جس سے آپ بے شمار لا علاج بیماریوں سے محفوظ رہ سکتے ہیں۔

ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانب دار نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

متعلقہ مضامین و خبریں

جواب دیں

Back to top button