مضامین و مقالات

بچھو کے بچے


بچھوکی ماں بچے پیدا کرنے کے بعد اُن کو اپنی کمر پہ بِیٹھا دیتی ہے۔ اور یہ بچے اپنی ہی ماں کی کمر کا گوشت نوچ نوچ کر کھاتے رہتے ہیں ۔ ماں طاقت رکھنے کے باوجود کچھ نہیں کہتی شکوہ نہیں کرتی چپ چاپ تکلیف سہتی رہتی ہے اور یہ بچے اس کا گوشت کھاتے رہتے ہیں ماں چلنے کے قابل نہیں رہتی لیکن بچے خود چلنے کے قابل ہو جاتے ہیں ۔ تب تک ان کی ماں بھی مر جاتی ہے۔ اور یہ بچے اپنی زندگی میں مگن ہوجاتے ہیں
انھیں بچوں کی طرح آج ہم میں سے بہت سے لوگ بلکل بچھو کےبچوں کی طرح بن چکے ہیں ماں باپ کی نافرمانی ان کی بےادبی انکی دیکھ بھال نہ کرنا ان کاکہناناماننا ان سےبلندآوازسے بات کرنااینٹھکرچیکھ چلاکربات کرناان کی ایک نہ سننا والدین بچہ پیدا ہونے کےبعدان بچوں کی پرورش اچھی تعلیم ودعااوراچھی دوادکھدردمیں راتوں کی نیدیں دن کا سکون اور تمام عیش وآشائس کوچھوڑاوربھول کرانھیں بچوں میں مگن ہوجاتے ہیں ان کےلئےمکانات دینے کے لیئے اپنی بسات کے مطابق دن رات دھوپ بارش کی پرواہ کیئے وغیرہ اپنے بچوں کے لیے محنت کرتے ہیں لیکن افسوس
وہی بچے جب بڑے ہوتے ہیں انھیں ماں باپ کے تمام احسانات کوجان بوج کربھول جاتے ہیں کسی اور کی محبت میں مگن ہوجاتے ہیں اور والدین سے ملنا بھی نہیں چاہتےان کی طرف دیکھنابھی گوارہ نہیں کرتے تو کیا وہ یہ سمجھتے ہیں ماں باپ کا دل دکھا کر وہ سکھ اور چین کی زندگی بسر کریں گے تو ہرگز نہیں والدین تو معاف کر دیں توعلیحدہ بات ہے مگرجومیرارب ہے وہ تو دیکھ ہی رہاہے جس نے والدین کا درجہ دیا ماں کے قدموں کےنیچے جنت ہےبتایا کیا وہ معاف کر دے گاہم میں سے بہت سے ایسےلوگ اپنے بوڑھے والدین کی خبر گیری تک نہیں کرتے اپنے ہی مقاصد کی تکمیل کےلیئے کوشاں رہتے ہیں
ان کی مثال بالکل انھیں بچھو کی طرح ہےجواپنےماں باپ کومارکرتکلیف دیکرپیداہورہاہے
اللہ پاک قرآن پاک میں فرماتا ہے کہ اپنے والدین کے سامنے اونچا نہ بولو اور انکو اف تک نہ کہو انھیں بات بات پرنہ جھڑکو پھر فرماتا ہے کہ باپ کی رضا میں اللہ کی رضا ہے پھر فرماتا ہے کہ والدین کا ہرحکم مانوپھر فرماتا ہےکہ والدین کے چہرے کی طرف دیکھ کر مسکرا دینا مقبول حج کا ثواب کی بشارت ہے
فقیر قادری نے اسکی تصحیح کی ہےکیونکہ اس تحریرمیں کافی ہی خامیاں پائی گئی تھیں ان کو درست کرکے تیار کیا ہے۔

دعاؤں کی درخواست ہےفقیر سراپائے تقصیر گدائے احسن سگ درباررضا محمد سلیم رضا رضوی برکاتی بریلوی ارشدی خادم ٹی ٹی ایس

ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانب دار نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

متعلقہ مضامین و خبریں

جواب دیں

Back to top button