تعزیت نامہ

آہ !آج اور ایک معتمد حافظ ملت علیہ الرحمہ چل بسے

(مفتی) قاضی فضل رسول مصباحی

استاذ العلما والفقہا حضور علامہ اسرار احمد صاحب کی رحلت دنیاۓ سنیت کے لۓ انتہائ رنج والم کی گھڑی ہے ،حضر ت اوقات درس کی پابندی کے ساتھ ازھر ہند "الجامعۃ الاشرفیہ مبارک پور” کے ممتاز اساتذہ میں شمار ہوتے تھے ،مختصر تدریسی تشریح میں تمام اسباق کے معانی و مفاہیم واشگاف کر دیتے تھے ،جماعت کےطلبہ پر امید و بیم جیسی نوعیت ظاہر رہتی تھی اور یہ دونوں کیفیت درس گاہ کی لازمی حیثیت ہے تاکہ بالترتیب قنوطیت ولا یعنی مشغولیت سے دوری رہے،بہر حال آپ کی رحلت ملت کا خسارہ اور اہل خانہ کا نقصان ہے مذکورہ باتیں مفتی قاضی فضل رسول مصباحی استاذ دارالعلوم اہل سنت قادریہ سراج العلوم نے ایک پریس ریلیز میں بتائیں،مفتی قاضی نور پرویز رشیدی کٹیہار،مولانا شیر محمد خان قادری پرنسپل دار العلوم اہل سنت قادریہ سراج العلوم برگدہی ،مہراج گنج ، مفتی قاضی فضل احمد مصباحی قاضئ شرع ضلع کٹیہار، مفتی قاضی شہید عالم رضوی استاذ جامعہ نوریہ بریلی شریف ،مفتی شمیم احمد نوری سہلاؤ شریف راجستھان،مولانا قاضی خطیب عالم مصباحی دار العلوم وارثیہ لکھنؤ، مولانا کاتب ذوالقرنین خان، مولانا عرفان احمد مصباحی ریسرچ اسکالر جامعہ ملیہ اسلامیہ دہلی،مولانا قاضی فضیل احمد سراجی،مفتی رضاءالمصطفی مصباحی،مولانا ابرار عالم مصباحی نائب صدر اصلاحی رویت ہلال کمیٹی سالماری کٹیہار ،مولانا معراج عالم خازن اصلاحی رویت ہلال کمیٹی سالماری کٹیہار،مفتی مبشر رضا ازہر ممبئ،مولانا عسجد رضا بائسی، ،ماسٹر قاضی ہدایت رسول ،ماسٹرقاضی محب الرسول،ماسٹر شاکر علی اعظم نگر، مولانا امتیاز اعظم نگر،مولانا فضیل پرنسپل دارالعلوم حمیدیہ بھؤ نگر بالوگنج،مفتی نوشاد عالم اعظم نگر،مولانا فیاض عالم مصباحی دارالعلوم محبوب یزدانی کچھوچھہ شریف، مولانا چراغ عالم سراجی،مولانا راغب حسین سراجی،مولاناقاضی مدثر علی سراجی، قاضی عنایت رسول،مولانا منظر الاسلام مدرسہ معین الاسلام ،ملک پور، مکھیا حسین اشرف اعظم نگر،ماسٹر عمران احمد اشرفی اعظم نگر۔مولانا حبیب الرحمن اشرفی کٹیہار ،مولانا حسیب الرحمن بنارس،مولانا نوشاد عالم حنفی سوناپور،مولانا فداء المصطفی سراجی کے علاوہ درجنوں علما نے مرحوم کی مغفرت اور مکین جنت وپسماندگان کے صبر جمیل اور اجر جزیل کی دعا کی ہے۔

ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانب دار نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

متعلقہ مضامین و خبریں

جواب دیں

Back to top button