قرآن مقدس کے متعلق وسیم رضوی کا بدبختانہ حرکت کسی طرح قابل قبول نہیں: سید محمد اشرف کچھوچھوی

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

دہلی: 14مارچ، ہماری آواز(پریس ریلیز) ملک کی مشہور تنظیم آل انڈیا علما ومشائخ بورڈ کے قومی صدر پیر سید محمد اشرف کچھوچھوی نے کہا ہے کہ بدنام زمانہ ملحد وسیم رضوی نے قرآن کریم کے حوالے سے جو بد بختانہ اور گستاخانہ بیان دیاہے،وہ کسی بھی طرح قابل قبول نہیں،یہ وہ مطالبہ ہے جس کی جرات وہمت پچھلی صدیوں میں بڑا سے بڑا دشمن اسلام نہیں کر سکا۔حتی سرکار رسالت مآب کے زمانے میں اہل کتاب یہودونصاریٰ بھی نہ کر سکے۔وسیم رضوی کا یہ بیان اس کا اپنا نہیں بلکہ جن کیتلوے چاٹتا ہے،ان کی زبان ہے۔معلوم ہوتا ہے کہ اس کی زبان پر انسان نہیں شیطان بولتا ہے۔اور یہی مسلمانوں کا ہمیشہ سے المیہ رہاہے کہ جوکام دشمن پوری طاقت وقوت کے باوجود نہیں کر سکتا اسے مسلمانوں میں سے دلال کھڑے کر کے کروانے کی کوشش کرتا ہے۔
وسیم رضوی کابیان کوئی نیا بھی نہیں ہے،ہمیشہ سے ہی ایسا ہوتا رہاہے۔اسلام دشمن طاقتوں کو سب سے زیادہ تکلیف جس بات سے ہے وہ قرآن کا محفوظ ومامون ہو نا ہے،کیونکہ دنیا جہان کی کتا بیں بد ل گئیں مگر قرآن آج تک نہیں بدلا۔اور یہ اس کی حقانیت کی دلیل ہے۔قرآن کریم میں صاف لکھا ہے کہ قرآن کو اللہ نے نازل کیا ہے اور وہی اس کی حفاظت کرنے والاہے۔لہٰذا قرآن کا کوئی بال بیکا نہیں کرسکتا۔ لیکن اس کا یہ بھی مطلب نہیں کہ ہم ہاتھ پر ہاتھ دھرے بیٹھے رہیں،بلکہ ہر قانونی طریقے سے اس کی مخالفت کی جائے،اس کے خلاف احتجاج درج کرایاجائے۔مگر صبر اور ہوش وحواس کادمن ہاتھ سے نہ جانے دیاجائے۔کسی بھی علاقے کے ذمہ داران جب آپ کو آواز دیں تو قانونی بالادستی قائم رکھتیے ہوئے احتجاج میں شریک ہوں۔اور زیادہ سے زیادہ ضلع مجسٹریٹار گورنر کومیمورنڈم دیں۔اگر کورٹ میں کاروائی ہوتی ہے تو اس کو فالوکریں اور اپنا ہر ممکن تعاون پیش کریں۔

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

About سالک دہلوی

مقبول احمد سالک مصباحی بانی و مہتمم :جامعہ خواجہ قطب الدین بختیار کاکی 210-بی بلاک، گلی نمبر-8، مدن پور کھادر ایکس ٹینشن، سریتا وہار، نئی دہلی)(انڈیا)

Check Also

پروفیسر گوپی چند نارنگ کی رحلت پر تعزیتی نشست کا سہ ماہی ادب عالیہ کی جانب سے انعقاد

نارنگ صاحب کی موت سے اردو ادب یتیم ہو گیا: ڈاکٹر فریاد آزرؔ نئی دہلی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔