تعلیم

علم تجوید کی اہمیت

امام اہل سنت فرماتے ہیں: ’’اتنی تجوید کہ ہر حرف دوسرے حرف سے صحیح ممتاز ہو فرضِ عین ہے ۔ بغیر اس کے نماز قطعاً باطل ہے۔ عوام بیچاروں کو (تو) جانے دیجئے خواص کہلانے والوں کو دیکھئے کہ کتنے اس فرض پر عامل ہیں۔ میں نے اپنی آنکھوں سے دیکھا اور اپنے کانو ں سے سُنا، کن کو؟ علماء کو، مفتیوں کو، مدرّسوں کو، مُصنّفوں کو، قُلْ ھُوَ اللّٰہُ اَحَد میں "اَحَد” کو "اَھَد” پڑھتے ہوئے اور سورہ منافقون میں "یَحْسَبُوْنَ کُلَّ صَیْحَۃٍ عَلَیْھِمْ” میں "یَعْسَبُوْنَ” پڑھتے ہیں، "ھُمُ الْعَدُوُّ فَاحْذَرْھُمْ: کی جگہ "فَاعْذَرْ” پڑھتے ہیں۔ وَ "ھُوَ الْعَزِیْز” کی جگہ "ھُوَ الْعَذِیْذ” پڑھتے ہیں ۔ بلکہ ایک صاحب کو "الحمد شریف” میں "صِرَاطَ الَّذِیْنَ” کی جگہ "صِرَاطَ الظِّیْنَ” پڑھتے سُنا ۔ کس کس کی شکایت کیجئے؟ یہ حال اکابر کا ہے پھر عوام بیچاروں کی کیا گنتی؟ اب کیا شریعت ان کی بے پر وائیوں کے سبب اپنے احکا م منسوخ فرما دے گی؟ نہیں نہیں ۔ اِنِ الْحُکْمُ اِلَّا لِلّٰہِ (ترجمۂ کنزالایمان) حکم نہیں مگر اللّٰہ کا۔
(فتاوی رضویہ، ۳/۲۵۳، بتصرف)

ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانب دار نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

متعلقہ مضامین و خبریں

جواب دیں

اسے بھی ملاحظہ کریں
Close
Back to top button