یوپی

وسیم رضوی ملک کی گنگا جمنی تہذیب کے لیے خطرہ: حافظ عطاءالرحمن

سپریم کورٹ ملعون وسیم رضوی کی دائر پٹیشن خارج کرے

سعادت گنج بارہ بنکی: 14 مارچ، ہماری آواز(پریس ریلیز)
اپنے آقاؤں کو خوش کرنے کے لئے اکثر اپنے بیانوں سےسرخیوں میں رہنے والے ملعون وسیم رضوی گزشتہ دنوں سپریم کورٹ میں پٹیشن داخل کر قرآن کریم کی چھبیس آیتوں کو ہٹانے کی بات کی جو ناقابل برداشت ہے انجمن رودادِ کربلا کے جنرل سکریٹری حافظ عطاءالرحمن انصاری نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وسیم رضوی کے ذریعہ سپریم کورٹ میں قرآن کریم کی آیتوں کے بارے میں جو عرضی داخل کی گئی ہے یہ ان کے پاگل پن کا ثبوت ہے،میں ا س کی سخت الفاظ میں مذمت کرتا ہوں۔انہوں نے کہا کہ قرآن کریم مذہب اسلام کی بنیاد ہے اور مسلمانوں کو اس پر پورا یقین ہے اور اس قرآن کریم پر یقین نہ کرنے والا مسلمان نہیں ہو سکتا۔ انہوں نے سپریم کورٹ سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس میں مداخلت نہ کرے کیونکہ یہ پوری دنیا کے مسلمانوں سے جڑا ہوا مسئلہ ہے، اسے فوراً خارج کردینا چاہئے آر ایس ایس کی گندگی پر پلنے والے اس شخص کا اسلام پر یہ کوئی پہلا حملہ نہیں ہے بلکہ اس سے پیشتر بھی کئی بار اس نے مسلمانوں کے خلاف اپنی غلاظت ظاہر کی ہے، کبھی رام جنم بھومی نامی فلم ریلیز کرکے اسلامی احکامات کی تضحیک کرتا ہے حکومت سے میرا مطالبہ ہے کہ اس طرح سے ملک کی گنگا جمنی تہذیب کو توڑنے والے ملعون وسیم رضوی کو فوراً گرفتار کیا جائے

ابوشحمہ انصاری

جناب ابوشحمہ انصاری صاحب صوبہ اترپردیش کے معروف ضلع بارہ بنکی سے تعلق رکھتے ہیں اور ہفتہ واری میگزین صداے بسمل کے بیورو چیف ہیں۔ نامور صحافی اور بہترین تبصرہ نگار کی حیثیت رکھتے ہیں۔ ہماری آواز

متعلقہ مضامین و خبریں

جواب دیں

Back to top button