متفرقات

حافظ توفیق ابن نورالہدیٰ صاحب کانیمالدھی رشتہ ازدواج سے منسلک

پورنیہ: ۳/مارچ، ہماری آواز(صادق قاسمی)
مذہب اسلام میں نکاح کی بہت بڑی اہمیت و فضیلت ہے۔نکاح انبیاء کرام علیھم الصلوۃ والسلام اور ہمارے پیارے آقا نبی کریم ﷺ کی چار سنتوں میں سے نکاح کرنا بھی ایک اہم ترین سنت ہے۔اس اہم ترین سنت کی وجہ سے مرد کی نگاہیں اور شرمگاہ کی حفاظت ہوتی ہے،یہ افزائش نسل انسانی کا ایک بہترین ذریعہ ہے۔مذہب اسلام نے شادی بیاہ کو آسان اور سہل بنایا ہے،حدیث مبارکہ میں ہے کہ نکاح کے بعد ایک سال کی عبادت بغیر نکاح کے ایک ہزار سال کی عبادت سے افضل و اعلیٰ ہے۔نبی کریم ﷺ نے ارشاد فرمایا کہ مومن بندہ جب شادی کر لیتا ہے تو اس کا نصف ایمان مکمل ہو گیا،اسی لئے حدیث نبوی ﷺ میں نکاح کو ایمان کا نصف حصہ کہا گیا ہے،امام غزالی رحمۃ اللہ علیہ اور دوسرے بزرگوں سے منقول ہے کہ شادی شدہ مسلمان کی غیر شادی شدہ مسلمان پر ایسی فضیلت ہے جیسے اللہ کی راہ میں جہاد کرنے والے کی فضیلت گھر بیٹھنے والے پر اور شادی شدہ کی ایک رکعت غیر شادی شدہ کی ستر رکعتوں سے افضل ہے۔اسی بناء پر مذہب اسلام نے نکاح کو اس قدر اہم بتایا ہے۔مرد اور عورت کو نکاح کے مہذب بندھن میں باندھنا لازمی سمجھا ہے۔اس لئے کہ نکاح انسانی خاندان کو وجود بخشتا ہے،اسی کے مدنظر عزیزی حافظ توفیق حسین ابن جناب نورالہدیٰ صاحب مقام کانیمالدھی پوسٹ سرسی وایا بائسی ضلع پورنیہ ہمراہ عزیزہ سلمہا بنت ماسٹر ارمان صاحب مقام ابھے پور پوسٹ پیازی ضلع پورنیہ مطابق ۳/مارچ بروز بدھ کو رشتہ ازدواج سے منسلک ہوگئے،شادی کی باوقار تقریب ماسٹر ارمان صاحب کے دروازے پر منعقد کی گئی۔نکاح کے بعد نوعروش کو مبارکباد دینے والوں میں حافظ توفیق کے بڑے بھائی شفیق عالم،مشفق عالم،چھوٹے بھائی توصیف عالم،حافظ نثار عالم،بہنوئی حیدر عالم کانیمالدھی اور
مولانا صادق قاسمی دھرم باڑی سمیتی امیدوار کھپڑہ پنچایت بیسہ کے ساتھ ساتھ حافظ ارشد اسعدی،حافظ ریاض ثاقب،ماسٹر نورعالم،ماسٹر خالد چلہنی،حافظ سعید الرحمن،نعیم الدین عرف بھکو،منشی ابوالکلام،ناصر عالم،سلمان عالم وغیرہ قابل ذکر ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے