شعور بیدار ہوا، ماحول بدل گیا

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

تحریر: طارق انور مصباحی، کیرالہ

آج سے دس بارہ سال قبل علمائے اہل سنت وجماعت کی جانب سے تعمیر مدارس کی خبریں ضرور موصول ہوتی تھیں,لیکن سماجی ورفاہی خدمات اور عصری تعلیم گاہوں کے قیام کی خبر سننے کو ہم ترس جاتے تھے۔

رضا اکیڈمی کچھ رفاہی وسماجی خدمات انجام دیتی تھی اور خانقاہ برکاتیہ نے علی گڑھ میں ایک عظیم الشان عصری تعلیم گاہ قائم کی تھی۔

اب یہ دیکھ کر خوشی ہوتی ہے کہ بہت سے علمائے اہل سنت وجماعت سماجی ورفاہی خدمات کی طرف بھی مضبوط قدم بڑھا چکے ہیں۔ہمارے علما عصری دانش کدوں کی تعمیر بھی فرما رہے ہیں۔متعدد علمائے کرام قوم کے اندر صالح سیاسی شعور بھی بیدار کر رہے ہیں۔

جامعہ اشرفیہ مبارکپور نے درسی کتابوں کی طباعت واشاعت بھی کی اور درسی کتابوں کے حواشی بھی لکھوائے۔بہت سے علما نے درسی کتابوں کی اردو شروحات بھی لکھیں۔

دعوت اسلامی(ہند) نے تبلیغ اسلام وسنت کے ساتھ تعمراتی کاموں کی طرف بھی توجہ دی اور ان کی منصوبہ بند پیش رفت جاری ہے۔

ماہنامہ پیغام شریعت(دہلی)کے اجرا سے قبل ہی ہمارا یہ منصوبہ تھا کہ قومی وملی خدمات انجام دینے والوں کی حوصلہ افزائی کی جائے۔

گرچہ ہم اس موضوع پر زیادہ معلومات قوم کو فراہم نہ کر سکے۔تاہم آج بھی ہمارا وہ عزم اپنی جگہ مستحکم ہے۔اگر قلم کاران اس موضوع پر دو تین صفحات پر مشتمل مضامین بھیجیں تو ان شاء اللہ تعالی اس کی اشاعت کی جائے گی۔طویل مضامین کی گنجائش کم ہوتی ہے۔

تعمیر مدارس ومساجد کے ساتھ اہل سنت وجماعت کی دیگر خدمات کو بھی اجاگر کیا جائے۔قوم مسلم کو معلوم ہونا چاہئے کہ اہل سنت وجماعت کی جانب سے بھی مختلف قسم کی قومی وملی خدمات انجام دی جا رہی ہیں۔

ایک جانب علمائے اہل سنت وجماعت کی یہ بے مثال خدمات ہیں جن کو دیکھ کر فرحت وشادمانی محسوس ہوتی ہے تو دوسری جانب سر ابھارتے ہوئے فتنوں کو دیکھ کر رنج والم بھی ہوتا ہے۔

حالیہ دس بارہ سال کے اندر اہل سنت وجماعت کے اندر تصوف کے نام پر ایک فتنہ برپا ہوا ہے۔

دل فریب اسلوب کے ساتھ گمراہ متصوفین نے قوم کو صلح کلیت کی طرف دھکیلنا شروع کر دیا ہے۔وہ جعلی تصوف کے عریاں لباس میں قوم کے سامنے آتے ہیں اور اہل ندوہ کی طرح اتحاد بین المسالک کا سبق پڑھاتے ہیں۔

ضرورت ہے کہ محررین ومقررین اور مبصرین ومفکرین اس جانب بھی متوجہ رہیں اور قومی وملی خدمات کے ساتھ فتنہ گروں کی سرکوبی بھی کرتے رہیں۔

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

About ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانب دار نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

Check Also

یوپی الیکشن: نہیں ہے کسی کو بھی سیاست کے معیار کو گرنے کی فکر !!

تحریر: جاوید اختر بھارتی اترپردیش میں الیکشن کی ہوا چلنے لگی ، بیان بازی ہونے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔