متفرقات

غزل: صیہونی بلا

نتیجۂ فکر: ناطق مصباحی

وہی معبود برحق پر فداہے
نظرمیں جس کے شاہ کربلا ہے

سعودیت یہودیت ہے یکساں
حکومت دونوں صیہونی بلا ہے

ہے جس کی فوج میں ہمت نہ جرات
وہی بزدل سپر پاور بنا ہے

ہوا افغان اس کے شر سے نالاں
وہ جوتا کھاکے بھی شاداں ہوا ہے

ہمارا ملک ھندوساں ہے یارو
کہ منھ میں دودھ سانپوں کو دیا ہے

اگرسانپوں نے ہم کو ڈسنا چاہا
کچلنا بھی ہمارا مشغلہ ہے

چمن تاراج کرنے کی نہ سوچو
حفاظت کے لیے ناطقؔ کھڑا ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے