متفرقات

نعت : خشک لکڑی کو وہ تلوار بناتے ہیں

رشحات قلم : محمدعسجد رضا نوری

سوئی قسمت کو وہ جگاتے ہیں
جس کو سرکار مدینے میں بلالیتے ہیں

چاند کو کردۓ ہیں دو ٹکرے
ڈوبے سورج کو وہ پھراتے ہیں

جو بھی کرتا ہے مدحت سرکار ﷺ
اس کو سرکارﷺ بخشواتے ہیں

آنکھیں ہوجاتی ہیں نم ان کیں
جو بھی طیبہ سے لوٹ آتے ہیں

میرے آقاﷺ کو دیا ہے میرے رب نے پاور
خشک لکڑی کو وہ تلوار بناتے ہیں

اپنے قلبوں میں بساکرکے محبت ان کی
سر کو سجدے میں ہم جھکاتے ہیں

محفل مصطفیﷺ سجا کے اے نوری
گھر تو جنت میں ہم بناتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے