نعت رسول

آگئے میرے حضور

نتیجہ فکر: سیدخالدعبداللہ اشرفی اورنگ آباد مہاراشٹرالہند

جب کہا،،،، بادِ صبا نے،،،،، آگئے میرے حضور
دی سلامی پھر ہوا نے،،،، آگئے میرے حضور

بج رہے ہیں ،،،،،شادیانے ،،،آگئے میرے حضور
ہیں نہ خوشیوں کےٹھکانےآگئے میرے حضور

زندگی جینا سکھانے ،،،آگئے میرے حضور
اصل میں انساں بنانے آگئے میرے حضور

گھر محلے ہیں،،، سجانے، آگئے میرے حضور
ہیں دئیے گھی کے جلانے آگئے میرے حضور

خُلق سے سب کولبھانے ،،،اگئے میرے حضور
دل میں سب کے گھربنانےآگئے میرے حضور

اجڑے گلشن کوبسانے ،،،،آگئے میرے حضور
نکہتیں اپنی سونگھانے،،،آگئے میرے حضور

خار راہوں سے ھٹانے،،،،، آگئے میرے حضور
بوجھ بوڑھوں کےاٹھانےآگئے میرے حضور

بندگی رب کی سکھانے آگئے میرے حضور
بندوں کورب سے ملانے آگئے میرے حضور

رونے والوں کو،،،،، ہنسانے آگئے میرے حضور
بھوکے پیاسوں کوکھلانے آگئے میرے حضور

جود کے دریا بہانے ،،،،،،آگئے میرے حضور
فیض کے تحفے لٹانے،،،، آگئے میرے حضور

شمس کو الٹاپھرانے،،،،، آگئے میرے حضور
چاند انگلی سے نچانے،،،، آگئے میرے حضور

کفر کوجڑ سے،،ہٹانے،،،،، آگئے میرے حضور
سوۓمنزل لےکےجانے،آگئے،،،،،،میرےحضور
فرق رنگوں کامٹانے ،،،،،آگئے میرےحضور
سب کوسینے سے لگانے آگئے میرے حضور

شَمَّعہِ وحدت،،، جلانے،،، میرے حضور
شرک کی ظلمت مٹانے،، آ گئے میرے حضور

اب بروں کو بھی نبھانے آگئے میرے حضور
دیکھ لےتو اے،،،، زمانے آگئے میرے حضور

بند ھوں گےناچ گانے،،،،،،آگئے میرے حضور
گونجیں گے حق کےترانےآگئے،،،،،میرے حضور

کلمہ کنکر سے پڑھانے،،،،،، آگئے میرے حضور
سجدہ پیڑوں سے کرانے،،، آگئے میرے حضور

بخت تھے بگڑے بنانے ،،،،آگئے میرے حضور
سوئی قسمت کوجگانے،،،آگئے میرے حضور

عشق کے دیپک جلانے،،،،، آگئے میرے حضور
حسن کے جلوے دکھانے،،،آگئے میرے حضور

رہ کے فاقوں سے کھلانے آگئے میرے حضور
غم جہاں بھر کے،،،مٹانے،،آگئے میرے حضور

رنگ وحدت کا چڑھانے،،،، آگئے میرے حضور
کفرکی ،،کالک،،، مٹانے،،،، آگئے میرے حضور

خلد میں سب کو،، بسانے آگئے میرے حضور
نار سے سب کو ،،،بچانے،، آگئے میرے حضور

جام الفت کا،،،،،،، پلانے،،، آگئے میرے حضور
اپنی الفت میں،،، جِلانے،، آگئے میرے حضور

جھوم کر بولیں دیوانے آگئے میرے حضور
گاو خوشیوں کے،، ترانے آگئے میرے حضور

نفرتیں دل سے مٹانے،،،، آگئے میرے حضور
لڑنے والوں کو ملانے،،،،، آگئے میرے حضور

بتکدوں کو،،، اب،،،،گرانے آگئے میرے حضور
حق پرستی،،، کو،،،، بتانے آگئے میرے حضور

کفر کوجڑ سے ہٹانے،،،،، آگئے میرے حضور
سوۓمنزل لےکےجانےآگۓ،،،،،،،میرےحضور

بتکدہ کعبہ بنانےآگئے، میرے حضور
سرکے بل بت کوگرانے ،،آگئے میرے حضور

عشق کی باتیں،،،، بتانےآگئےمیرےحضور
روح پاکیزہ،،،،،،، بنانے،، آگئے میرے حضور

دولتِ عرفاں لٹانے،،،،،،،، آگئے میرے حضور
علم کے غنچے کھلانے،،،،آگئے میرے حضور

دل کوآئینہ ،،،بنانے،،،،،،،، آگئے میرے حضور
زنگِ عصیاں کا،،، چھڑانے آگئے میرے حضور

ہم کودامن میں چھپانے،،،آگئے میرے حضور
پل پہ امت کو،،، بچانے،،،، آگئے میرے حضور

ظلم سہہ کرمسکرانے،،، آگئے میرے حضور
دوست دشمن کو بنانے آگئے میرے حضور

گل محبت کے کھلانے آگئے میرے حضور
نفرتیں دل سے مٹانے،، آگئے میرے حضور

سارے غم دل سے بھلانے آگئے میرے حضور
دل جگر جاں میں، سمانے،،آگئے میرے حضور

مسکراے سب دیوانے،،،،، آگئے میرے حضور
لگ گئے سب غم،،،،،،، بھلانےآگئےمیرے حضور

پھر نہ اب در در دیوانے آگئے میرے حضور
چل نبی کے آستانے،،،،،،،، آگئے میرے حضور

ھم غلاموں کونبھانے،،،، آگئے میرے حضور
سینے سے اپنے ،،،لگانے،،، آگئے میرے حضور

دل سے ویرانی ہٹانے ،،، آگئے میرے حضور
قبئہ نوری بنانے ،،،،،،،،آگئے،،،، میرے حضوٍر

گرنے والوں کو اٹھانے،،، آگئے میرے حضور
ڈوبتوں کواب بچانے،،،، آگئے میرے حضور

پارکشتی کو ،،،،لگانے ،،،،،آگئے میرے حضور
سب لگے خوشیاں منانے،، آگئے میرے حضور

عاصیوں کو،،،،بخشوانے آگئے میرے حضور
نور ی دامن میں چھپانے آگئے میرے حضور

لامکان وعرش جانے،، آگئے میرے حضور
عرش کو تلوے چمانے آگئے میرے حضور

مژدہءِ جنت ،،،سنانے، ،،،،آگئے میرے حضور
غیب کی باتیں،، بتانے ،،،،آگئے میرے حضور

پستیوں سے اب اٹھانے آگئے میرے حضور
مرتبہ اونچا،،،،، دلانے، آگئے میرے حضور

رب سے امت بخشوانے،،،آگئے میرے حضور
اپنی امت کوبچانے آگئے،،،میرے حضور

دھوپ سے سب کوبچانےآگئے میرے حضور
لیکے ٹھندے،،، شامیانے ،آگئے میرے حضور

پیاس پیاسوں کی بجھانےآگئے میرے حضور
حشر میں کوثر ،پلانے ،،،،،آگئے میرے حضور

ہم چلیں دھونی رمانے آگئے میرے حضور
مل گئے ھم کوٹھکانےآگئے،،،،،،میرے حضور

ڈر نہ اب تو اے دیوانے آگئے میرے حضور
قبر خالد ،،،جگمگانے،،،،، آگئے میرے حضور

ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانب دار نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

متعلقہ مضامین و خبریں

جواب دیں

Back to top button