نظم

زمیں کی گود سے اٹھ اور آسماں بن جا

محمد ادیب رضا بدایونی

حبیبِ خالقِ اکبر کا مدح خواں بن جا
زمیں کی گود سے اٹھ اور آسماں بن جا

زمانے بھر میں مہک تیری پھیل جاۓگی
تو شہرِ پاکِ مدینہ کا‌ گلستاں بن جا

نبی کی عزت و عظمت پہ جاں فدا کرکے
زمانہ یاد رکھے ایسی داستاں بن جا

عمل میں تیرے ہمیشہ ہو سیرتِ آقا
ہر اک غریب مسلماں کا‌ سائباں بن‌جا

نبی کے عشق میں یہ زندگی فنا کرکے
مصیبتوں کی فِکَر چھوڑ شادماں بن جا

صحابہ جتنے بھی ہیں سب سے ہے خدا راضی
تو چھوڑ سب وشتم ان کا قدرداں بن‌جا

ادیب مدح‌ سرائ نہ کر زمانے کی
بفیضِ حضرتِ حسان نعت خواں بن جا

ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانب دار نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

متعلقہ مضامین و خبریں

جواب دیں

اسے بھی ملاحظہ کریں
Close
Back to top button