اہم خبریںپروانچل

علامہ کیفی بستوی کے تقریب سالانہ فاتحہ کی تکمیل

سدھارتھ نگر: ہماری آواز (نامہ نگار)، 22دسمبر//
ممتازالادباء مفکر ملت حضرت علامہ شاہ محمد قادری کیفی بستوی علیہ الرحمہ (سابق نائب صدرالمدرسین جامعہ اہل سنت امدادالعلوم مٹہنا کھنڈسری سدھارتھ نگر یوپی انڈیا) کے سالانہ فاتحہ کا اہتمام آج مورخہ 6/ جمادی الاولیٰ 1442ھ مطابق 22/ دسمبر2020ء بروز منگل ان کے دولت کدہ پر حضرت علامہ مولانا مختار احمد قادری استاذ جامعہ اہل سنت امدادالعلوم مٹہنا کی سرپرستی، حضرت علیہ الرحمہ کے صاحبزادگان بالخصوص مولانا شاہ عالم کیفی اور مولانا حبیب اللہ قادری کی نگرانی میں ہوا۔
ائمۂ مساجد، اساتذۂ مدارس عربیہ اور مختلف دارالعلوم اور جامعات میں تعلیم حاصل کرنے والے قرب وجوار کے طلبہ قرآن خوانی میں شریک رہے۔
حضرت علامہ مختار احمد قادری کی سرپرستی میں پونے ایک (12:45) بجے حضرت کے دولت کدہ سے نکل کر ان کے ذاتی باغ ( گاؤں کی مغربی سمت جہاں حضرت علیہ الرحمہ کا مزار مقدس ہے) میں پہنچ کر صلاۃ وسلام فاتحہ خوانی اور سرپرست تقریب کی دعاؤں کے ساتھ 1:05/ بجے (دوپہر) حضرت علیہ الرحمہ کی روح کو ایصال ثواب کیا گیا ۔
اس موقع پر علامہ انوارلحق رضوی، صوفی مبارک حسین رضوی، حافظ محمدحسن رضوی، مفتی برکت علی قادری، مولانا اشتیاق احمد مصباحی، قاری صابر علی مشاہدی، مولانا بدرالدین نوری، مولانا جمیل احمد قادری، ماسٹر امتیاز احمد خان اساتذۂ جامعہ مٹہنا ، مولانا طاہرعلی قادری، حافظ امیر احمدعلیمی، مولانا عبدالرحیم قادری، مولانا عبداللہ جانکی نگری، مولانا جمال احمد پپری ، مولانا سرتاج احمد جنید ڈیہہ، مولانا عبدالجبار بلہر وغیرہ موجود رہے۔ ساتھ ہی ساتھ حضرت علیہ الرحمہ کے دیگر عقیدت مندوں کی تعداد بھی اچھی خاصی تھی۔ حالات حاضرہ اور موسم کے مدنظر مزید کسی پروگرام کا پروگرام بنانا بھی دانش مندی کے خلاف تھا ، اسی وجہ سے دن ہی دن میں تمام تر تقریبات کی تکمیل ہوئی۔ حالات اور موسم کے سازگار ہونے پر حسب سابق شایان شان پروگرام کے انعقاد کا جذبہ سلامت ہے۔ الحمد للہ!

خاک پاے مفکر ملت
ازہرالقادری

جامعہ اہل سنت امدادالعلوم مٹہنا
کھنڈسری سدھارتھ نگر یوپی انڈیا
9559494786

ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانب دار نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

متعلقہ مضامین و خبریں

جواب دیں

Back to top button