غزل

غزل: محقق کا موبائل ہی ہے رہبر

نتیجۂ فکر: ناطق مصباحی

لباس خضرمیں لگتا ہے خوشتر
صلح کلی منافق سے ہے بدتر

اسی کے نام کا سکہ ھےجاری
فریب ودجل میں جسکا ہے بستر

سیہ روکاناکھوٹاکی ہےقسمت
دیارحسن میں سب سے ہےبہتر

مطالعہ کی نہیں فرصت ہے اسکو
محقق کا موبائل ہی ہے رہبر

فریب ودجل میں یکتا ہواھے
وہی تو آج اکثر کاہے لیڈر

پڑھالکھانہ سمجھا علم و فن کو
بنا مرشد ہزاروں کاھے رہبر

ہوا ناطق بھی حق گوئی کا مجرم
ہوا ہے دوست دشمن سے بھی بدتر

ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانب دار نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

متعلقہ مضامین و خبریں

جواب دیں

اسے بھی ملاحظہ کریں
Close
Back to top button