شعر و شاعری

دعا: دیکھ لوں روئے مصطفیٰ یارب

ظفر پرواز گڑھواوی، جھارکھنڈ

میں گنہ گار ہوں بڑا۔۔۔۔ یارب
پھر بھی بندہ ہوں میں ترا یارب

حشر کی دھوپ ہے بہت ہی کڑی
گرمئ حشر سے۔۔۔۔۔ بچا یارب

میرے دلکی یہی۔۔۔۔ تمنا ہے
دیکھ لوں شہر۔۔ مصطفے یارب

موت کے جب قریب آجاءے
لب پہ کلمہ۔۔۔ ہو لاالہ یارب

روح جب جسم۔۔ سے نکلنے لگے
دیکھ لوں روئے مصطفیٰ یارب

تو ہی خالق ہے اور رازق بھی
دے مرے درد کی دوا یارب

حشر میں ہونہ۔۔ میری رسوائی
ساری عیبوں کو تو چھپا یارب

بعد مرنے کے یہ ظفر خاں کو
آتش نار سے۔۔۔۔ بچا یارب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے