ہے اندھیرا بہت روشنی چاہیے ۔

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

رشحات قلم : ذکی طارق بارہ بنکوی

جو تھی تجھ کو مجھے دے گئی چاہئے
پھر وہی رات نعمت بھری چاہئے

اس کے چہرے کی تابندگی چاہئے
ہے اندھیرا بہت روشنی چاہئے

جان تو اپنی مخمور آنکھیں دکھا
مجھ کو صہبا شکن مے کشی چاہئے

تیری چاہت نے بے حوصلہ کر دیا
مجھ کو پھر سے تری سرکشی چاہئے

آ، اے جانِ غزل میرے نزدیک
آکے مجھے موسمِ شاعری چاہئے

مانتا ہوں بہت ہی خفا ہو مگر
اتنی تو بات سن لینی ہی چاہئے

کےہے کس میں ہماری بھلائی چھپی
دوستی یا ہمیں دشمنی چاہئے

ساری سوچوں نے بس اک نتیجہ دیا
ہم کو کر لینی پھر دوستی چاہئے

کیونکہ ہم بھی نہیں چاہتے موت یار
اور تم کو بھی تو زندگی چاہئے

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

About ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانب دار نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

Check Also

یوم خواتین پر کچھ اشعار

ازقلم: سرفراز بزمی ہے موت زمانے کے لئے مرگ امومتاس راز سے واقف نہیں افرنگ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔