اہم خبریں

لال قلعے کے واقعہ کی جانچ ہو: ٹکیت

ہماری آواز/نئی دہلی، 27 جنوری (پریس ریلیز) کسان لیڈر راکیش ٹکیت نے لال قلعہ کمپلکس میں کل لوگوں کے داخلے اور مذہبی جھنڈا لہرائے جانے کے واقعہ کی جانچ کرانے کی مانگ کی ہے۔
مسٹر ٹکیت نے بدھ کو صحافیوں سے بات چیت میں لال قلعہ میں داخل ہونے اور وہاں جھنڈا لہرائے جانے والوں کی شناخت کرنے اور ان کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ ایسا کرنے والے لوگوں کا کن سیاسی پارٹیوں اور افراد سے تعلق تھا اس کی جانچ کرائی جانی چاہئیے۔
انہوں نے کہا کہ جوائنٹ کسان مورچہ نے کسانوں سے لال قلعہ جانے کی اپیل نہیں کی تھ وہ پہلے سے مقررہ راستے پر آگے بڑھ رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ پریڈ کے لئے پہلے سے مقرر کچھ راستوں کا محاصری کیا گیا تھا جس کی بھی جانچ کرائی جانی چاہیے۔
کسان لیڈر نے کہا کہ جس کسی نے بھی پولیس ملازمین پر ٹریکٹر چڑھانے کی کوشش کی ان کی شناخت کی جانی چاہیے اور ان کے خلاف کارروائی کی جانی چاہیے۔ کسان تنظیموں اور پولیس کے درمیان سمجھوتے کے بعد یوم جمہوریہ کے موقع پر راجدھانی میں کسان پریڈ نکالنے پر اتفاق ہوا تھا۔
واضح رہے کہ کل کسان پریڈ کے دوران کافی لوگ ٹریکٹر کے ساتھ لال قلعہ کے احاطے میں داخل ہوگئے تھے اور وہاں ایک مذہبی جھنڈا لہرایا تھا اور توڑ پھوڑ کی تھی. کسان تنظی تین زرعی اصلاحی قوانین کو منسوخ کرنے اور فصلوں کی کم از کم امدادی قیمت کو قانونی درجہ دیئے جانے کی مانگ کے ساتھ 63 دنوں سے راجدھانی کی سرحدوں پر دھرنا مظاہرہ کررہے ہیں۔

ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانب دار نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

متعلقہ مضامین و خبریں

جواب دیں

Back to top button