نظم : یومِ شہادت عمر رضی اللہ تعالیٰ عنہ۔

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

از قلم : رمشا یاسین

وہ کہ جب کافر تھا
تو نماز پڑھ نہیں سکتے تھے۔
وہ کہ جب مسلم ہوا
کھلے عام اذان دی گئ۔
وہ جس کے ہونے سے
انصاف مکمل تھا۔
وہ جس کے دور میں
کوئ بھوکا نہیں سویا۔
وہ جو طاقت تھا اسلام کی
دشمن بھی جس سے ڈرتا تھا۔
وہ کہ جو کہتا تھا
خدا وحی کرتا تھا۔
وہ سارے عالم کو جس نے
اکیلے کیا فتح۔
وہ جس نے بیت المقدس کو
امن سے جیتا۔
وہ گزرتا تھا جس گلی سے
شیطان رستہ بدلتا تھا۔
وہ جس کے لئے نبیؐ فرماگئے کہ
میرے بعد نبی ہوتا تو یہ ہوتا۔
وہ کہ جس پر کوئ بھی
وار سامنے نہ کرسکا۔
وہ جس کی التجا تھی
کہ شہادت ملے اسے۔
وہ بھی مدینے میں اور
حالتِ سجدہ میں۔
وہی ہوا وہی ہوا۔
سجدہ کی حالت اور مدینہ
ہو گیا قتل پیچھے سے انکا۔
وہ شخص کوئ اور نہیں۔
عمر ہے، عمر ہے۔

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

About ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانب دار نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

Check Also

ماں کی شان

اہلِ مغرب کی روایتوں میں ایک دن ماں کے نام مخصوص ہے ، یعنی حیات …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔