منقبت در شان امام حسین رضی اللہ عنہ

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

از قلم : محمد تحسین رضاقادری رفاعی

صدیوں سے مل رہاہے یہ صدقہ حسین کا
دن رات بٹ رہا ہے یہ باڑا حسین کا

اونچا کیا خدا نے ہے رتبہ حسین کا
دونوں جہاں میں چھا گیا جلوہ حسین کا

محشر کی گرمیوں سے ہی بچنے کے واسطے
امت کے سر پہ دیکھو ہے سایہ حسین کا

ظلمت یزیدیوں کی وہاں چل نہیں سکیں
اللہ کے نبی سے تھا رشتہ حسین کا

تاریخ کربلا کو خون سے جو یہ لکھی
یوں آج بھی تو خون ہے تازہ حسین کا

اصغر سوکھے ہونٹوں نےپانی سے کہہ دیا
جنت میں بہ رہاہے جو دریاحسین کا

حملہ یزیدیوں وہاں دین پر کیا
اس وقت کام آگیا پہرہ حسین کا

کرب و بلا میں شمع وفاجب جل اٹھی
اس واسطے تو ہورہاہے چرچا حسین کا

نہر فرات لال ٹھی انسان کے خون سے
اس واسطے ہی پیاسا تھا کنبہ حسین کا

دین نبی کے واسطے سب کچھ لٹادیا
پیغام کربلا جو ہے سجدہ حسین کا

تحسین ‛ نام شاہ کا زنذہ رہے نہ کیوں
جب تک جہاں رہے گا یہ شیدا حسین کا

از قلم ( مولانا ) محمد تحسین رضاقادری رفاعی
دارالعلوم ضیائے مصطفیٰ کانپور
٩٨٣٨٠٩٩٧٨٦

الدال علیٰ خیر کفاعلہ (شیئر کریں)

About ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانب دار نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

Check Also

آنکھ ہےگِریاں ترے لیے

حضرت مفتی نظام الدین نوری نوراللہ مرقدہ کی یاد میں تڑپتے ہوئے دل کی آواز …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔