اشعاروغزل

کب تک کہے گا ہائے گیلیکسی کا نوٹ ایٹ

از : میرزا امجد رازیٓ

مٹی بھرے گی حضرتِ انسان تیرا پیٹ
بہتر ہے بند کر لے تو اب خواہشوں کا گیٹ

کشتی کو چھوڑ دے تو رضاے خدا پہ بس
مت کر کسی بھی خضرِ تحائف کا آج ویٹ

بازارِ مصر سمجھا ہے تو بزمِ دوستاں
اپنی محبتوں کا لگاتا ہے کیوں تو ریٹ

بنتا تو ہے کہ رشک کرے دیکھ دیکھ کر
لایا ہے جرمنی کے عجائب جو روم میٹ

رازیٓ یہ خواب خواب ہے اس کو بھلا بھی دے
کب تک کہے گا ہاے Galaxy کا note 8

ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانب دار نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

متعلقہ مضامین و خبریں

جواب دیں

Back to top button