نعت رسول

نعت رسول: ہوں ہند میں بے قرار آقا

بر زمین رضؔا بریلوی
محمد اشرفؔ رضا قادری
مدیرِ اعلی سہ ماہی امین شریعت

ملے سکون و قرار آقا
ہیں رنج و غم بے شمار آقا

چَھٹیں مصیبت کی بدلیاں اب
اے شاہِ عالی وقار آقا

عطا ہو علم و ادب کی دولت
اے صاحبِ اقتدار آقا

ہر ایک شے پر جہاں کی حاصل
ہے آپ کو اختیار آقا

گنہ کی گٹھری ہے سر پہ بھاری
بخیر پُل سے اتار آقا

بلا لو شہرِ مدینہ جلدی
ہوں ہند میں بے قرار آقا

خدا سے کر دیں مری سفارش
شفیعِ روزِ شمار آقا

برائے امّت، برائے ملت
تھے روتے زار و قطار آقا

صحابہ و تابعین سارے
تمہارے ہیں جاں نثار آقا

شبِ الم کا طلوع ہو دن
حیاتِ اشرفؔ سنوار آقا

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے