پروانچل

حافظ کتاب اللہ قادری کا چہلم منایا گیا

سدھارتھ نگر: ہماری آواز (محمد قمرانجم فیضی) 18 جنوری//

کل نفسٍ ذائقۃ الموت کے تحت ہر جانداز چیز کو موت کو مزہ چکھنا ہے۔جو لوگ دنیا میں آئے ہیں۔انہیں ایک نہ ایک دن دنیا سے جانا ہے۔اسی کے تحت حضرت حافظ وقاری کتاب اللہ قادری رحمۃ اللہ علیہ استاذ۔دارالعلوم اہل سنت فیضان مصطفی بھوانی گنج ضلع سدھارتھ نگر کا چہلم برائے ایصال ثواب سر زمین جمالڈیہہ چافہ ،پوسٹ بڑھنی بازارچافہ ضلع سدھارتھ نگر میں بروز سنیچر 16 جنوری/ 2021 کو بہت ہی تزک واحتشام کے ساتھ انعقاد کیا گیا، جس میں جشن عید میلادالنبی صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم کا بھی انعقاد کیا گیا تھا۔
جس میں کثیر تعداد میں علماء کرام نے شرکت فرمائی، نظامت کے فرائض مولانا رمضان علی صاحب نے انجام دی جب کہ تلاوت کلام اللہ حافظ مہتاب عالم اسماعیلی نے پیش کیا اور مولانا خالد حشمت حشمتی پتھرا بازار، محمد عالم صاحب اسماعیلی ۔حضرت علامہ صوفی عبدالرحمن مشاہدی مصباحی، قاری مجاہد رضا محبوبی وغیرہ نے بہت ہی نرالے اور اچھوتے لب ولہجہ میں نعت پاک صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم کے اشعار گنگنائے جس سے سامعین خوب محظوظ ہوئے۔ حضرت قاری صدام حسین نظامی اٹوا بازار نے ماشاء اللہ بہت ہی اچھوتے انداز میں ایصال ثواب کے تعلق سے خطاب کیا۔حضرت مولانا الحاج مفتی فرید الدین یار علوی امجدی صاحب قبلہ نے کل نفس ذائقۃ الموت کے تحت قرآن وحدیث کی روشنی میں مدلل ومفصل خطاب فرمایا اخیر میں پیر طریقت رہبر راہ شریعت حضرت علامہ و مولانا سید زبیر اشرف صاحب قبلہ اشرفی جیلانی۔ناظم اعلی دارالعلوم اہل سنت فیضان مصطفی بھوانی گنج نے کہا کہ حضرت حافظ وقاری کتاب اللہ قادری صاحب بہت ہی اچھے مدرس تھے، ان کے لئے دعائے مغفرت کی ،اور بعدہ صلاۃ وسلام کے محفل کا اختتام ہوا۔ نیز جشن عیدمیلاد النبی صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم میں بہت سارے علماء کرام، شعراء اسلام رونق اسٹیج رہے جس میں خصوصاً حضرت مولانا ذاکر حسین فیضی صاحب، حضرت مولاناسفیراحمد حشمتی صاحب،حضرت مولانا کرم حسین فیضی صاحب قبلہ۔جناب واجد علی،کے علاوہ گاؤں کے افراد موجود تھے

ہماری آواز

ہماری آواز ایک غیر جانب دار نیوز ویب سائٹ ہے جس پر آپ سچی خبروں کے ساتھ ساتھ مذہبی، ملی،قومی، سیاسی، سماجی، ادبی، فکری و اصلاحی مضامین اور شعر وشاعری پڑھ سکتے ہیں۔ یہی نہیں آپ خود بھی ہمیں اپنے پاس پڑوس کی خبریں اور مضامین وغیرہ بھیج سکتے ہیں۔

متعلقہ مضامین و خبریں

جواب دیں

Back to top button