نظم

صداے حق: توحید کےنغمات سنانے کے لیے آ

نتیجۂ فکر: ناطق مصباحی

توحید کےنغمات سنانے کے لیے آ
مجدھارمیں کشتی ھے ترانے کے لیے آ

اصحاب نبی تارےھیں تم انکی ضیاء سے
تاریکیوں میں رہ کوبنانے کے لیے آ

جب آل نبی کشتی ھیں تم انکے سہارے
طوفان سے ملت کوبچانے کے لیے آ

مشکل کشاہیں تیرے لئے حیدر کرار
ایمان کی شمشیر اٹھانے کے لیے آ

تکبیر کی آواز سے لرزاں ہے جبل بھی
کہسار میں بھی نعرہ لگانے کے لیے آ

باطل کی خرافات کی حدھوگئ ناطق
اب خیمئ باطل کوجلانے کے لیے آ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے